Home O Herbal

منگل, 02 20th

Last updateپیر, 21 اکتوبر 2013 6am

اکوتہ (داد کی ایک قسم)

* گھونگچی کو پانی میں پیس کر اکوتہ یا ناسور کے مقام پر لیپ کرنا بہت مفید ہے۔
* اکوتہ کے مقام پر چار پانچ کھٹمل مل دینے سے اکوتہ اچھا ہو جاتا ہے۔ چند روز اس پر عمل کریں۔
* دھنیا کی تازہ پتیاں پانچ تولہ لے کر کُترلیں۔ سرسوں یا تِل کے آدھ پاؤ تیل میں ڈال کر پکائیں جب پتیاں جل جائیں تو آگ پر سے اتالیں۔ اس میں سیاہ مرچ دو ماشہ سفوف کرکے ملائیں اور نیم کے دستہ سے خوب گھوٹیں۔ پھر اسے محفوظ کرلیں۔
* آٹھ عدد کچلہ کو ایک پاؤ تل کے تیل میں اتنا پکائیں کہ کچلہ جل جائے۔ پھر روٖغن کو صاف کرلیں۔ اسے اکوتہ پر لگائیں۔ سر کے کنج میں بھی اس کا استعمال مفید ہے۔
* کوڑی سوختہ، توتیائے بریاں، ہلدی تینوں برابر وزن لے کر آپ لیمون میں حل کرکے لگائیں۔
* ہری دوب اور چرونجی دونوں برابر وزن لے کر پانی میں پیس کرکے اکوتہ پر لگائیں۔
* گیرو، سہاگہ بریاں، دونوں کو چنبلی کے تیل میں حل کرکے روزانہ اکوتہ پر لگائیں۔
* درخت مہوہ کے پتوں کو تل کے تیل سے چرب کرکے نیم گرم کرلیں۔ اور اکوتہ کے مقام پر باندھیں۔ چار گھنٹے کے بعد کھول دیں۔ پھر دوسرے پتے باندھیں۔
* بابچی کو خوب باریک کرلیں اور اکوتہ کے مقام پر سرسوں کا تیل لگا کر یہ سفوف چھڑک دیں۔

BLOG COMMENTS POWERED BY DISQUS