* امرود کی خشک پتیوں کو باریک کرکے زخم پر چھڑکنے سے زخم جلد خشک ہوجاتے ہیں۔
* چھوہارہ کی گھٹلی کو جلا کر باریک کرلیں اسے زخموں پر چھڑکنے سے زخم جلد خشک ہوتے اور بھرتے ہیں۔
* گوہ کی کھال کو جلا کر کسی عضو پر لیپ کیا جائے تو عضو اتنا بے حس ہو جاتا ہے کہ اگر اسے کاٹا جائے تو کوئی تکلف نہیں ہوتی ہے۔ بڑے پھوڑوں اور دملوں پر نشتر دینے میں تکلیف سے بچنے کے لیے ترکیب بہت مناسب ہے۔
* ارہر کے پتوں کو پانی میں پیس کر نیم گرم کرکے پھوڑں پر لیپ کرنے سے پھوڑے جلد پک کر پھوٹ جاتے ہیں اور آسانی سے لیپ خارج ہو جاتی ہے۔
* درخت شیشم کی کونپلوں کو دو تولہ کی مقدار میں لے کر تین چھٹانک پانی میں جوش کر کے چھان لیں۔ صبح و شام اس کا استعمال کرنا، غایت درجہ کا مصفی خون ہے۔ جلدی بیماریوں میں بہت مفید ہے۔
* کنیز کی خشک پتیوں کو خوب باریک کرکے زخموں پر چھڑکنے سے زخم جلد بھر جاتے ہیں۔