Home O Herbal

منگل, 02 20th

Last updateپیر, 21 اکتوبر 2013 6am

جذام (کوڑھ)

* شنگرف رومی ایک تولہ کو کاغذی لیموں کے پانی میں حل کریں یہاں تک کہ ایک سو ایک لیموں کا پانی ختم ہوجائے پھر اسے محفوظ کرلیں ایک چاول کی مقدار میں پان میں رکھ کر کھانا مرض جذام میں مفید ہے کچھ دنوں تک استعمال کریں اور مضر چیزوں سے پرہیز کریں۔
* بسفائج کو کوٹ کر باریک سفوف بنالیں اور نو ماشہ کی مقدار میں روزانہ ایک بار پانی کے ساتھ استعمال کریں یا اسی مقدار میں پانی میں جوش دے کر چھان کر پیئیں کچھ روز کے استعمال سے مرض جذام میں نمایاں فائدہ ہوتا ہے۔
* ہلیلہ سیاہ کو باریک کرلیں اور ہر پانچ دن پر ایک بار ڈیڑھ تولہ کی مقدار میں کھائیں اسی طرح پچاس دنوں میں دس بار استعمال کریں مرض کی ابتدا و انتہا دونوں حالتوں میں مفید ہے۔
* نگند باری ایک تولہ کو رات کے وقت تھوڑے پانی میں بھگو دیں، صبح کو اس کا پانی چھان کر دو تولہ شہد خالص ملا کر پیئیں کچھ روز تک استعمال کریں ابتدائے جذام میں مفید ہے۔
* درخت نیم کی مستی کو جذام کے زخموں پر لگانا بہت مفید ہے۔
* ہرن کھر بوٹی کو سفوف بناکر اس کے برابر وزن شکر سفید ملا کر رکھ لیں نو ماشہ کی مقدار میں روزانہ استعمال کریں یا اتنی ہی مقدار میں رات کو پانی میں بھگودیں اور صبح کو چھان کر مصری ملا کر پیئیں مرض جذام میں مفید ہے۔
* سرس کے پتے ایک یا دو ماشہ، سیاہ مرچ دو ماشہ، دونوں کو پانی میں پیس کر روزانہ چالیس یوم تک پینا شفائی اثر رکھتا ہے۔
* اگر جذامی کی سانس میں تنگی ہو تو تازہ دودھ پینا مفید ہوتا ہے۔
* ببول کی چھال ساڑھے تین تولہ کو نیم کوب کرکے رات کو تھوڑے پانی میں بھگو دیں اور صبح کو پانی چھان کر پیئیں۔
* مہندی کی خشک پتی ساڑھے تین تولہ لے کر ڈیڑھ پاؤ پانی میں رات کو بھگو دیں اور صبح کو اتنا جوش دیں کہ آدھا پانی باقی رہے پھر اسے چھان کر بیس ماشہ شہد ڈال کر پیئیں چالیس روز تک مسلسل استعمال کرنا بہت مفید ہے۔
* چال موگرا، باپچی دونوں برابر وزن لے کر علیحدہ علیحدہ باریک کرکے ملالیں اور تین ماشہ کی مقدار میں استعمال کریں۔
* نیم کے پتے ایک تولہ، کالی مرچ پانچ عدد، دونوں کو پانی میں پیس کر روزانہ پیئیں اور جسم پر نیم کا تیل لگائیں۔
* چال موگرے کا تیل پانچ قطرے تھوڑے دودھ میں ڈال کر پیئیں اور اس تیل میں نیم کاتیل ملا کر جذام کے داغوں پر لگائیں۔

BLOG COMMENTS POWERED BY DISQUS