Home O Herbal

منگل, 02 20th

Last updateپیر, 21 اکتوبر 2013 6am

طب نبوی

درد شقیقہ کا تفصیلی بیان

صداع شقیقہ (آدھا سیسی) کا سبب سر کی شرائن میں غیر طبعی مواد خود اسی میں پیدا ہونا یا دوسرے اعضا سے بصورت صعود وار تقاءسر کی طرف بلند ہونا اور سر اور دماغ کی دونوں تنصیفوں میں سے کمزور حصے کا اسے قبول کرنا یہ غیر طبعی مواد یا تو بخارات ہوتے ہیں یا اخلاط حارہ و باردہ ہوتے ہیں جس کی مخصوص علامت شرائین کی تڑپ بالخصوص اخلاط حارہ میں اگر خون کی کثرت ہو یا ریاح کا ارتقاءزیادہ ہو جب اس پر پٹی لگائی جائے اور تڑپ روکنے کا عمل کیا جائے تو درد رک جاتا ہے اور مریض کو سکون ہوجاتا ہے۔
ابو نعیم نے اپنی کتاب طب نبوی ﷺ میں لکھا ہے کہ درد سر کی یہ اذیت جناب نبی کریم ﷺ کو ہوجایا کرتی جس کا اثر پورے چوبیس گھنٹے یا دو دن رہتا اور نکلتا نہ تھا۔
ابن عباس کے اثر سے اس کی تائید ہوتی ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے خطاب فرمایا اور آپ کے سر مبارک پر پٹی بندھی تھی۔
اور صحیح بخاری میں ہے کہ آپ نے اپنے مرض موت میں فرمایا۔ ”واراساہ“ (ہائے رے درد سر) اور اپنا سر پٹی سے اپنے مرض میں باندھے رہتے سر پر پٹی کی بندش سے شقیقہ اور دوسرے قسم کے درد سر میں نفع ہوتا ہے۔

BLOG COMMENTS POWERED BY DISQUS