Home O Herbal

منگل, 02 20th

Last updateپیر, 21 اکتوبر 2013 6am

طب نبوی

نظربد کا فوری تدارک

اگر کسی نظربد لگانے والے شخص کو خود اپنی نظر لگنے کا خدشہ ہو تو اسے فورا یہ دعا پڑھ کر اس کا شردفع کرنا چاہیے۔
اللھم بارک علیہ
”اے اللہ تو اس پر برکت نازل فرما“
جیسا کہ نبی اکرمﷺ نے عامر بن ربیعہ سے فرمایا جن کی نظربد کا شکار سہل بن حنیف ہوگئے تھے، کہ کیوں نہ تم نے دیکھ کر برکت کی دعا کی اور اللھم بارک علیہ کہا؟
اسی طرح سے نظر بد کا اثر ((ماشاءاللہ لاحول ولا قوة الا باللہ )) سے بھی ختم ہو جاتاہے ہشام بن عروہ سے روایت ہے وہ اپنے باپ عروہ سے روایت کرتے ہیں کہ جب وہ کوئی چیز دیکھتے جو ان کو بھلی لگتی یا اپنے باغات میں سے کسی شاداب باغ میں داخل ہوتے تو پڑھتے۔((ماشاءاللہ لا حول ولا قوة الا باللہ ))
اسی طرح حضرت جبرئیل سے منقول وہ دعا ہے، جس سے آپ نے حضورﷺ پر دم کیا تھا، اور جسے امام مسلم ؒنے اپنی کتاب صحیح مسلم میں ان الفاظ کے ساتھ روایت کیا ہے۔
((بسم اللہ ارقیک من کل شی ءیو ذیک من شر کل نفس اوعین حاسد اللہ یشفیک بسم اللہ ارقیک))
”اللہ کے نام سے میں تجھ پر دم کرتا ہوں ہر اس چیز سے جو تجھے اذیت دے اور ہر نظربد کے شر اور حاسد کی نظربد سے، اللہ تجھے شفاعطا فرمائے، میں اللہ کے نام کے ساتھ تجھ پر دم کرتاہوں“
سلف کی ایک جماعت نے آیات قرآنی کو لکھ کر اس کو پانی میں گھول کر مریض کو پلانے کی اجازت دی ہے مجاہد کا کہنا ہے کہ قرآن کو لکھ کر پانی سے دھونے کے بعد اس کا پانی پلانا قابل اعتراض نہیںہے، اسی جیسی بات حضرت ابو قلابہ سے بھی منقول ہے اور حضرت ابن عباس سے مروی ہے کہ آپ نے ایک عورت کوجس کو زچگی کی تکلیف تھی، قرآن کی آیت لکھ کر اسے دھو کر پلانے کا حکم دیا، ابو ایوب نے بیان کیا کہ میں نے ابو قلابہ کو دیکھا کہ انہوں نے قرآن کا کچھ حصہ لکھا پھر پانی سے دھو کر اس کا پانی ایسے شخص کو پلایا جو درد سے بےقرار تھا۔

BLOG COMMENTS POWERED BY DISQUS